تازہ ترین
outline

امریکی کانگرس کا حصہ بننے والی دو مسلمان خواتین جنہوں نے تاریخ رقم کر دی

امریکی کانگرس کے وسط مدتی انتخابات میں کامیاب ہونے والے نئے اراکین نے حلف اٹھا لیا ہے اور اس موقع پر دو باحجاب مسلمان خواتین توجہ کو مرکز بنی رہیں جنہوں نے ایوان میں آکر ایک نئی تاریخ رقم کی ہے

نومنتخب ارکان کانگرس میں پہلی بار دو باحجاب مسلمان خواتین شامل ہیں ۔ راشدہ طلیب جو فلسطینی نژاد امریکی شہری ہیں اور مشی گن سے کانگرس کی نشست پر کامیاب ہوئیں اور الحان عمر جو صومالیہ نژاد امریکی شہری ہیں اور منی سوٹا سے رکن کانگرس منتخب ہوئیں

راشدہ طلیب نے اس موقع پر فلسطین کا کشیدہ کاری اور کڑھائی والا لباس پہنا جبکہ الحان عمر بھی اپنے روائتی لباس میں دکھائی دیں

ان دونوں خواتین نے کئی ریکارڈ قائم کیئے ہیں ۔ راشدہ طلیب پہلی فلسطینی نژاد رُکن کانگرس ہیں تو الحان عمر نہ صرف ایوان میں جانے والی پہلی سیاہ فام خاتون ہیں بلکہ پہلی صومالیہ نژاد شہری بھی ہیں اور ان دونوں کے ایوان میں جانے سے یہ تاریخ رقم ہوئی کہ پہلی بار دو مسلمان خواتین ایوان کا حصہ بنیں

الحان عمر کی کہانی بہت دلچسپ ہے -وہ حلف لینے کے لیئے واشنگٹن ڈی سی ایئرپورٹ پر اتریں تو انہوں نے ایک ٹویٹ کی کہ ٢٣ سال پہلے میں یہاں ایک پناہ گزین کی حیثیت سے آئی تھی اور آج امریکی قانون ساز کے طور پر اتری ہوں

دراصل الحان عمر کے والد نور عمر محمد صومالیہ کے شہری تھے اور الحان عمر بھی وہیں موغادیشو میں پیدا ہوئیں جب خانہ جنگی چھڑ گئی تو ان کے والد اپنے بچوں کو لیکر نکل پڑے اور انہوں نے تین سال کینیا کے ایک مہاجر کیمپ میں گزارے

مہاجر کیمپ میں تین سال گزارنے کے بعد انہوں نے بطور پناہ گزین امریکہ میں رہنے کی درخواست دی جو قبول ہوگئی اور 1995 میں وہ امریکہ منتقل ہو گئے،سنہ 2000  میں الحان عمر کو امریکی شہریت دیدی گئی اور آج وہ امریکہ کے سب سے مقدم اور مقدس ایوان کا حصہ ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*