تازہ ترین
outline
Featured Video Play Icon

پانچ حیرت انگیز سائنسی ایجادات جنہوں نے حادثات کی کوکھ سے جنم لیا

آج ہم آپ کو بتائیں گے پانچ بڑی حادثاتی ایجادات کے بارے میں جو اچانک دریافت ہوئیں مگر انہوں نے انسانی زندگی میں انقلاب برپا کر دیا-

1879 میں کونسٹنٹائن فال برگ نامی ایک کیمیا گر تارکول کے متبادل استعمالات پر تحقیق کر رہا تھا ایک دن کام سے فارغ ہونے کے بعد گھر پہنچا تو بیوی کیساتھ چائے پیتے  ہوئے اسے بسکٹ کچھ زیادہ میٹھے محسوس ہوئے،اگر کوئی فرماں بردار شوہرہوتا تو سوچتا شاید بیوی کے ہاتھ لگنے سے مٹھاس بڑھ گئی ہے مگر اسے خیال آیا کہ آج وہ ہاتھ دھونا بھول گیا ہے اور ہاتھوں پر تارکول لگی ہوئی ہے یوں مصنوعی شوگر ایجاد ہوئی جو آج زندگی کا اہم ترین جزو ہے

مائیکرو ویو اون ہر گھر کی ضرورت ہے مگر یہ بھی حادثاتی ایجاد ہے دوسری جنگ عظیم کے دوران پرسی سپنسر ریڈار سے نکلنے والی انتہائی چھوٹی لہروں کا باریک بینی سے مشاہدہ کررہا تھا جب اس کی جیب میں پڑی چاکلیٹ پگھل گئی اور اور اسے خیال آیا کہ ان شعائوں کو جمع کرکے اوون کا کام لیا جا سکتا ہے یوں اوون ایجاد ہوا اور آج ہمارے کچن کے لیئے ناگزیر سمجھا جاتا ہے

ہالی ووڈ اور بالی ووڈ ستاروں کے رنگ برنگے دلکش بالوں کے پرستار تو بہت ہیں مگر یہ بات بہت کم لوگوں کو معلوم ہے کہ کلر ڈائی کرنے کا فارمولا بھی حادثاتی طور پر ہاتھ آیا -ولیم ہینری پرکن پر ملیریا کا علاج دریافت کرنے کی دھن سوار تھی ایک دن تجربات کے دوران کیمیائی مادوں کے ملاپ سے خوبصورت رنگ سامنے آئے تو سنتھیٹک کلر دریافت ہوئے

نیلی جادوئی گولی ویاگرا جس نے مرد حضرات کے جنسی مسائل بڑی حد تک حل کر دیئے یہ بھی باقاعدہ منصوبہ بندی سے ایجاد نہیں کی گئی -ایک کمپنی انجائنا کے مریضوں کی دوائی بنانے کے لیئے کیلنکل ٹرائل کر رہی تھی جب انہیں معلوم ہوا کی انجائنا کے لیئے بنائی گئی دوائی مرض ختم کرنے میں تو کامیاب نہیں رہی مگر اس سے مریضوں کی قوت مردانگی میں حیرت انگیز طور پر اضافہ ہو رہا ہے یوں اس تحقیق کو رُخ دوسری طرف موڑ دیا گیا

الفریڈ نوبیل کو موت کا سوداگر کہا جاتا ہے کیونکہ اس نے ڈائنامائیٹ ایجاد کیا جس بم دھماکوں میں استعمال ہوتا ہے اسی کے نام سے ہی ہر سال نوبیل انعام دیئے جاتے ہیں مگر دلچسپ بات یہ ہے کہ ڈائنامیٹ بھی ایک حادثے کی پیداوار ہے -الفریڈ نائٹروگلیسرین پر تجربات کر رہا تھا ایک کنستر لیک ہونے کی وجہ سے محلول لکڑی کے برادے میں جذب ہو گیا اور آگ لگائے جانے پر دھماکے سے پھٹ گیا –

اسی طرح ایکسرے ،پیس میکر اور پنسلین سمیت کئی اشیا حادثاتی طور پر ایجاد ہوئیں ان پر پھر کبھی بات کریں گے دیکھتے رہئے “آئوٹ لائن“

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*