تازہ ترین
outline

افغانستان: 17 سال سے جاری جنگ کے خاتمے کے لیئے مذاکرات کامیاب،18 ماہ میں امریکی فوج کا انخلا

پاکستان کے ہمسایہ ملک افغانستان میں گزشتہ 17 سال سے جاری جنگ کے خاتمے کے لیئے امریکہ اور طالبان کے قطر میں ہونے والے مذاکرات کامیاب ہو گئے ہیں ،امن معائدے کے مسودے پر اتفاق ہو گیا ہے جس کےتحت امریکی فوج 18 ماہ میں افغانستان سے چلی جائے گی

مذاکراتی عمل میں شریک امریکہ کے خصوصی ایلچی زلمے خلیل زاد نے کہا ہے مذاکرت میں خاطرخواہ پیشرفت ہوئی ہے لیکن اب بھی کچھ معاملات حل طلب ہیں۔ البتہ طالبان ذرائع نے کہا کہ امن معاہدے کے مسودے پر اتفاق ہو گیا ہے اور بہت جلد اس کا اعلان کر دیا جائے گا

قبل ازیں افغان انٹیلی جنس چیف معصوم ستانگزئی ایک اعلیٰ سطح کے وفد کے ہمراہ قطر پہنچے تھے تاکہ جنگ بندی کے حوالے سے پیشرفت ہو سکے جبکہ امریکہ کے خصوصی ایلچی زلمے خلیل زاد کابل پہنچ گئے ہیں جہاں وہ افغان صدر اشرف غنی کو اعتماد میں لیں گے اور پھر باضابطہ بیان جاری کیا جائے گا

غیر ملکی خبر رساں اداروں کے مطابق طالبان نے امریکا کو اس بات کی یقین دہانی کرائی ہے کہ افغانستان کی سرزمین القاعدہ یا داعش کو امریکا اور اس کے اتحادیوں پر حملے کے لیے استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی، اور یہی امریکا کا مرکزی مطالبہ تھا۔

واضح رہے کہ گیارہ ستمبر کے بعد امریکہ نے افغانستان پر حملہ کیا تھا جس کے بعد وہاں خانہ جنگی کی کیفیت رہی اور طالبان سے مذاکرات کے باوجود امن معائدے پر اتفاق نہیں ہوسکا

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*