outline

مجھے مردوں کے بجائے خواتین نے ہراساں کیا ،رابی پیرزادہ کا انکشاف

میشا شفیع کے علی ظفر پر الزامات سے شروع ہونے والی “می ٹو “ کی مہم نے تب نیا رُخ اختیار کر لیا جب خوبرو اداکارہ رابی پیرزادہ نے یہ انکشاف کرکے سب کو حیران کر دیا کہ انہیں شوبز میں مردوں کے بجائے خواتین نے ہراساں کیا

سوشل میڈیا پر جاری کی گئی ویڈیو میں رابی پیرزادہ نے علی ظفر کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ ‘یہ سب پبلسٹی اسٹنٹ ہے ایسے کوئی خاتون ہراساں نہیں ہوجاتی، شوبز میں گھریلو جھگڑوں سے لے کر طلاق یا میل ملاپ کے جو بھی معاملات سامنے آتے ہیں، سب پبلک کے لیے ہوتے ہیں’۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘میں بھی طویل عرصے سے شوبز انڈسٹری میں ہوں، اگر آپ عزت دیں گے تو آپ کو عزت ملتی ہے، ہماری شوبز کی خواتین می ٹو مہم کا غلط استعمال کر رہی ہیں’۔

میشا شفیع-علی ظفر تنازع پر نادیہ حسین اور ریشم کی متضاد رائے

رابی پیرزادہ نے بتایا کہ لوگ ان پر تنقید کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ ’آپ اور (اداکارہ) میرا پبلسٹی اسٹنٹ کرتے ہیں، جس پر میں کہتی ہوں کہ مجھے کیا ملے گا یہ سب کرکے، میں یہ کیوں کروں گی‘۔

انہوں نے کہا کہ ‘خواتین کے لیے مردوں پر ہراساں کرنے کا الزام لگانا بہت آسان ہوگیا ہے، مجھے ایسا کرنا ہو تو میں بھی کسی پر لگادوں لیکن ایسا کرنا بالکل درست نہیں ہے’۔

رابی پیرزادہ نے مزید بتایا کہ انہوں نے جب شوبز انڈسٹری میں قدم رکھا تو انہیں مردوں نے بہت عزت دی لیکن خواتین نے ہراساں کرنے کی بہت کوشش کی تھی، لیکن انہوں نے ان کوششوں کو نظرانداز کرکے فاصلہ برقرار رکھا تھا۔

یاد رہے کہ کچھ روز قبل میشا شفیع نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں علی ظفر پر ایک سے زائد مرتبہ جنسی ہراساں کیے جانے کا الزام عائد کیا تھا جس کی گلوکار نے تردید کردی تھی۔

اس کے بعد سے ‘می ٹو’ مہم کے حوالے سے ایک نئی بحث چھڑ گئی ہے اور شوبز اسٹارز اپنے اپنے انداز میں اس کی حمایت یا مخالفت میں بیانات دیتے نظر آرہے ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*