outline

واٹس ایپ کا نیا سکیورٹی فیچر،ایک میسج پانچ سے زائد افراد کو فارورڈ نہیں ہوسکے گا

واٹس ایپ پر فارورڈ میسج صارفین کے لیئے شدید زحمت اور پریشانی کا باعث تھے کیونکہ بعض من چلے ایک ہی میسج سینکڑوں لوگوں کو بھیج دیا کرتے تھے مگر اب واٹس ایپ انتظامیہ نے اس پریشانی کو بھانپتے ہوئے نیا سکیورٹی فیچر متعارف کروا دیا ہے

واٹس ایپ کی نئی پالیسی کے تحت کوئی بھی میسج پانچ سے زائد لوگوں کو فارورڈ نہیں کیا جا سکے گا -اگرچہ یہ فیصلہ جعلی خبروں کی ترسیل روکنے کی غرض سے کیا گیا ہے تاہم اس سے غیر ضروری قسم کے فارورڈ میسجز سے بھی صارفین کو نجات ملے گی

واضح رہے کہ ہمارے ہمسایہ ملک بھارت میں واٹس ایپ کی جانب سے یہ فیچر چھ ماہ پہلے ہی متعارف کروا دیا گیا تھا مگر اب اس پابندی کا اطلاق پاکستان میں واٹس ایپ استعمال کرنے والے صارفین پر بھی ہوگا

شروع میں کوئی بھی پیغام آگے بھیجنے کی حد مقرر نہ تھی مگر جب اس کے منفی پہلو سامنے آئے تو دنیا بھر میں بیس پیغامات کی حد مقرر کرنا پڑی -بھارت میں باالخصوص افواہیں پھیلائے جانے کے باعث پانچ کی حد مقرر کی گئی

انتخابات میں بھی واٹس ایپ کے غلط استعمال کی شکایات عام تھیں ،اس سال چونکہ انڈونیشیا اور بھارت سمیت کئی ممالک میں عام انتخابات ہو رہے ہیں اور پھر جعلی خبروں کا معاملہ بھی سنگین تر ہوتا جا رہا تھا اس لیئے اب ایک پیغام پانچ افراد سے زائد فارورڈ نہ ہونے کی پابندی کا اطلاق دنیا بھر کے واٹس ایپ صارفین پر کیا جا رہا ہے

لیکن اس پابندی کے اطلاق کے بعد بھی خاطر خواہ گنجائش موجود ہے -واٹس ایپ کے موجودہ ضابطوں کے مطابق ایک گروپ میں زیادہ سے زیادہ 256 افراد کو شامل کیا جا سکتا ہے یوں اگر ایک پیغام کو پانچ گروپوں میں فارورڈ کیا جائے تو 1280 لوگوں تک رسائی حاصل کی جا سکتی ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*