تازہ ترین
outline

بہاولپور،شدت پسندی میں لتھڑے طالب علم نے اختلاف رائے پر انگریزی کے پروفیسر کو مارڈالا

بہاولپور کے ایس ای کالج میں تب قیامت گذر گئی جب شدت پسندانہ سوچ میں لتھڑے ایک طالب علم نے اپنے استاد اور شعبہ انگریزی کے سربراہ پروفیسر خالد حمید کو محض اس لیئے چھریوں کے وار کرکے مارڈالا کہ اس کے خیال میں نئے آنے والے طلبہ کے اعزاز میں ویلکم پارٹی دینا غیر اسلامی ہے

بہاولپور کے گورنمنٹ صادق ایجرٹن کالج میں شعبہ انگریزی کے ایسوسی ایٹ پروفیسر خالد حمید کا قتل کرنے والے طالبعلم کی شناخت خطیب حسین کے نام سے ہوئی ہے اور وہ بی ایس انگریزی پروگرام کے پانچویں سمسٹر کا طالب علم ہے-

کالج ذرائع کے مطابق بہاولپور کی تحصیل یزمان سے تعلق رکھنے والا خطیب حسین مولوی خادم حسین کا پیروکار اور تحریک لبیک کا فعال کارکن ہے اس کے نزدیک ہنسنا بھی گناہ کے زمرے میں آتا ہے

کالج میں نئے آنے والے طلبہ کے اعزاز میں ویلکم پارٹی منعقد ہونا تھی اور پروفیسر خالد حمید منتظم کی حیثیت سے بچوں کو ریہرسل کروا رہے تھے پہلے نامعلوم طلبہ کی طرف سے اس ویلکم پارٹی کے خلاف پوسٹر لگائے گئے

بدھ کی صبح خطیب حسین گھر سے تیار ہو کر آیا اور ایک تیز دھار چھری ساتھ لایا -صبح کے وقت پروفیسر خالد حمید جیسے ہی اپنے دفتر کی جانب بڑھے،برآمدے میں ستون کی پیچھے چھپے قاتل نے دبوچ لیا اور چھریوں کے وار کرکے قتل کر دیا

اس لرزہ خیز واردات کے بعد کالج میں کہرام بپا ہوگیا اور نہ صرف طلبہ بلکہ اساتذہ میں بھی خوف کی لہر دوڑ گئی

قاتل کو پولیس نے حراست میں لے لیا ہے اور اس نے نہ صرف اپنا جرم قبول کیا ہے بلکہ اسے اپنے کیئے پر کوئی پشیمانی بھی نہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*