تازہ ترین
outline

پی ٹی آئی کا “دماغ“سمجھے جانے والے وزیرخزانہ اسد عمر کی کابینہ سے چھٹی

وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر جنہیں پاکستان تحریک انصاف کا “برین“ سمجھا جاتا ہے ،انہیں وفاقی کابینہ سے فارغ کر دیا گیا ہے ،اسد عمر کی فراغت کی افواہیں کئی روز سے زیر گردش تھیں تاہم جمعرات کی شام اسد عمر نے خود اپنی فراغت کا اعلان کیا

وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کابینہ میں ردوبدل کے نتیجے میں چاہتے ہیں کہ میں وزارت خزانہ کی جگہ توانائی کا قلمدان سنبھال لوں لیکن میں نے فیصلہ کیا ہے کہ میں کابینہ میں کوئی بھی عہدہ نہیں لوں گا۔

اس ٹویٹ کے بعد انہوں نے اسلام آباد میں تن تنہا ایک پریس کانفرنس کی جس میں انہوں نے اس فیصلے کی تصدیق کی اور بتایا کہ وزیراعظم نے انہیں وزارت خزانہ کی بجائے توانائی کا قلمدان سونپنے کی خواہش ظاہر کی، آج صبح ملاقات میں کابینہ سے علیحدگی پر وزیراعظم کی تائید حاصل کی، کابینہ سے الگ ہونے کا مقصد یہ نہیں کہ عمران خان یا ان کے نئے پاکستان کے وژن کو سپورٹ کرنے کے لیے دستیاب نہیں ہوں گا، تحریک انصاف اور عمران خان کیلئے ہمیشہ دستیاب رہوں گا۔

انہوں نے وزیراعظم عمران خان کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ 7 سال پہلے تحریک انصاف میں شامل ہوا یہ سفر بہت اچھا رہا، اس سفر میں مشکل اور اچھے حالات بھی دیکھے، کچھ ایسا کرنے کی کوشش کی جس سے ملک کی بہتری ہوسکے۔

یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ اسد عمر کی جانب سے یہ فیصلہ ایک ایسے موقع پر کیا گیا ہے جب گزشتہ ہفتے ہی وہ انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ (آئی ایم ایف) سے بیل آؤٹ پیکج پر گفتگو کے لیے واشنگٹن گئے تھے اور ان کی وہاں عالمی بینک کے حکام سے بھی ملاقاتیں ہوئی تھیں۔

تاہم اسی دورے کے دوران ان کو عہدے سے ہٹائے جانے اور کابینہ میں اہم تبدیلیوں کے حوالے سے قیاس آرائیاں شروع ہو گئی تھیں جسے حکومت نے مسترد کردیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*