تازہ ترین
outline

سی ڈی اے ڈائریکٹر اغوا نہیں ہوئے ،ویڈیو بیان سامنے آگیا

وفاقی ادارے سی ڈی اے کے ڈپٹی ڈائریکٹر محمد ایاز خان جن کے اغوا ہونے کی اطلاعات موصول ہوئی تھیں ،ان کا ویڈیو بیان سامنے آگیا ہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ موبائل فون گم ہونے کے باعث گھر والوں کو اطلاع نہ دے سکے اور وہ ڈیرہ اسماعیل خان میں خیریت سے ہیں

اس سے قبل بتایا گیا تھا کہ ایس پی طاہر داوڑ کے بیہمانہ قتل کے بعد ایک اور پشتون افسر کو وفاقی دارالحکومت اسلام آباد سے اغوا کرلیا گیا ہے اور معاملے کی چھان بین کے لیئے پولیس نے مشترکہ تحقیقاتی کمیٹی (جے آئی ٹی) تشکیل دے دی ہے

پولیس کے مطابق سی ڈی اے کے ڈپٹی ڈائریکٹر محمد ایاز تھانہ آب پارہ کے علاقے سے لاپتہ ہوئے، وہ کل (15 نومبر) دوپہر ڈھائی بجے دفتر سے نکلے اور اس کے بعد سے ان کے بارے میں کسی کو علم نہیں۔

پولیس کا کہنا ہےکہ ڈپٹی ڈائریکٹر سی ڈی اے محمد ایاز کے پی اے نے پولیس کو واقعے سے آگاہ کیا۔

پولیس کے مطابق لاپتہ سرکاری افسر کی سی ڈی آر نکلوائی جارہی ہے اور تمام سیکیورٹی اداروں کو واقعے سے آگاہ کردیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق ایس پی سٹی عامر نیازی کی سربراہی میں جے آئی ٹی کی تحقیقات جاری ہیں۔

سی ڈی اے افسر کی گمشدگی ایک ایسے وقت میں ہوئی ہے، جب گذشتہ ماہ 26 اکتوبر کو پشاور پولیس کے ایس پی طاہر خان داوڑ کو بھی اسلام آباد سے اغوا کرلیا گیا تھا، جن کی تشدد زدہ لاش 13 نومبر کو افغانستان سے ملی۔

ذرائع کے مطابق اغوا ہونے والے سی ڈے اے ڈائریکٹر محمد ایاز بھی پشتون ہیں اور ان کا تعلق محسود قبائل سے ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*