تازہ ترین
outline

گورا تو گورا گورے کا کوا بھی سیانا ،فرانس میں پارک صاف رکھنے کے لیئے کوے نگران مقرر

اردو کا محاورہ تو یہ ہے کہ “دکھ بھریں بی فاختہ اور کوے میوے کھائیں“ مگر یہ باتیں اب پرانی ہو گئیں ،اب تو کوے ہی کام کام کریں گے اور کوے ہی میوہ کھائیں گے

فرانس میں ایک پارک کو صاف رکھنے کے لیئے6 سیانے کوئوں کی خدمات حاصل کی گئی ہیں جو سگریٹ کے ٹکڑے اور دیگر چھوٹی چیزوں کو اٹھا کر کچرا دن میں ڈالنے کے کام میں مہارت رکھتے ہیں

بتایا گیا ہے کہ یہ سیانے کوے دن بھر کام کرنے کے بعد بدلے میں اپنا معاوضہ ’چھوٹے چکن نگٹس‘ کی صورت میں حاصل کر سکیں گے

فرانسیسی حکام کے مغربی حصہ وینڈی کے ایک پار میں کوئے جلد اپنے فرائض کی ادائیگی میں لگ جائیں گے۔

پروگرام کے صدر نیکولس ڈی ویلیرز کے مطابق ’اس پروگرام کا مقصد صرف صفائی کرنا مقصود نہیں کیونکہ عمومی طورپر لوگ خود بھی صفائی پسند ہوتے ہیں لیکن اس کے ذریعے ہم دیکھ سکھیں گے کہ قدرت بھی ہمیں ماحول کی دیکھ بھال کا پیغام دیتی ہے‘۔

کوؤں کی نسل کے حوالے سے انہوں بتایا کہ ’روکس‘ نامی کوا اپنی عقلمندی کی وجہ سے مشہور ہے اور کوؤں کی یہ نسل فطرتاً انسانوں کے ساتھ کلام کرنے اور کھیل کے ذریعے تعلقات قائم رکھنے میں دلچسپی رکھتے ہیں‘۔

واضح رہے کہ یہ پہلی مرتبہ نہیں کہ کوؤں نے اپنی سیانے ہونے کا ثبوت دیا ہوا، رواں برس جون میں یونیورسٹی آف کیمبریج میں ایک وینڈنگ میشن تیار کی گئی جس میں کوئے نے کمال دانشمندی سے مسائل کا حل نکلا تھا۔

اس حوالے سے بتایا گیا کہ روکس نامی نسل کے کوئے بہترین ورکز ہیں جو 45 منٹ سے کم ووقت میں ایک چھوٹے باکسے کو کوڑے سے بھر سکتے ہیں۔

مطلب یہ کہ انگریز تو انگریز ،انگریز کے کوے بھی سیانے ہوتے ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*