outline

کوئٹہ کی ہزارہ برادری ایک بار پھر نشانے پر ،سبزی منڈی خودکش دھماکے میں20افراد شہید

بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں ہزارہ برادری کو ایک بار پھر دہشتگردوں کی طرف سے نشانہ بنایا گیا ہے اور اس بار کوئٹہ کی سبزی منڈی میں ہونے والے خودکش دھماکے کے دوران 20 افراد شہید جبکہ متعدد زخمی ہوئے ہیں

صوبائی حکومت کی فراہم کردہ تفصیلات کے مطابق خودکش دھماکہ جمعے کی صبح ہزار گنجی کے علاقے میں واقع مارکیٹ میں ہوا اور مرنے والوں میں ہزارہ برادری سے تعلق رکھنے والے آٹھ افراد کے علاوہ ایک سکیورٹی اہلکار اور ایک بچہ بھی شامل ہے

ابتدائی اطلاعات کے مطابق سبزی منڈی میں دھماکا خودکش تھا جب کہ ڈی آئی جی کوئٹہ عبدالرزاق چیمہ کا کہنا ہے کہ دھماکا آلو کی دکان پر لوڈنگ کے دوران ہوا

دھماکے کے بعد سکیورٹی اہلکاروں نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا اور ہلاک اور زخمی ہونے والے افراد کو سول ہسپتال، بولان میڈیکل کمپلیکس ہسپتال اور شیخ زید ہسپتال منتقل کیا گیا۔

سول ہسپتال کوئٹہ کے ترجمان وسیم بیگ نے بتایا کہ سول ہسپتال میں 11 لاشیں لائی گئی ہیں جن میں ایک بچہ بھی شامل ہے۔

ڈی آئی جی کوئٹہ کے مطابق دھماکے میں شہید ہونے والوں میں ایک ایف سی اہلکار اور 7 ہزارہ برادری سے تعلق رکھنے والے افراد بھی شامل ہیں جب کہ واقعے میں 40 سے زائد افراد زخمی بھی ہوئے۔

سکیورٹی حکام کا کہنا تھا کہ جب ہزارہ قبیلے سے تعلق رکھنے والے افراد آلوؤں کے گودام پر آئے تو زوردار دھماکہ ہوا۔ ان کا کہنا تھا کہ زخمیوں میں ہزارہ قبیلے کے علاوہ دیگر برادریوں کے لوگ بھی شامل ہیں۔

واضح رہے کہ اس سے پہلے بھی کئی بار ہزارہ برادری کو دہشتگردوں کی طرف نشانہ بنایا گیا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*