outline

ایفی ڈرین کیس ،حنیف عباسی کی سزا معطل ،ہائیکورٹ نے ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیدیا

لاہور ہائیکورٹ نے ایفی ڈرین کیس میں سزا پانے والے مسلم لیگ (ن)کے رہنما حںیف عباسی کی درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے ان کی سزا معطل کر دی ہے اور انہیں رہا کرنے کا حکم دیدیا ہے

مسلم لیگ (ن) کے رہنما حنیف عباسی کو الیکشن سے چند روز قبل ایفی ڈرین کیس میں عمر قید کی سزا سناتے ہوئے رات گئے جیل بھجوا دیا گیا تھا اور اس وقت سے اب تک وہ قید میں ہیں

حنیف عباسی نے انسداد منشیات کی عدالت سے ایفی ڈرین کیس میں عمر قید کی سزا کو لاہور ہائیکورٹ میں چلینج کیا تھا

حنیف عباسی نے اپنی درخواست میں مؤقف اپنایا کہ انسداد ِمنشیات عدالت نے فیصلے میں اہم قانونی نکات کو نظر انداز کیا، کیس میں نامزد دیگر 7 ملزمان کو رہا کردیا گیا ہے۔

درخواست میں استدعا کی گئی تھی کہ درخواست گزار کے خلاف سیاسی بنیادوں پر کیس بنایا گیا لہٰذا عدالت سزا معطل کرکے ضمانت منظور اور رہا کرنے کا حکم دے۔

لاہور ہائیکورٹ کی جسٹس عالیہ نیلم کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے حنیف عباسی کی درخواست پر سماعت کرکے فیصلہ سنایا اور لیگی رہنما کی سزا معطل کردی۔

عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا کہ انسدادِ منشیات کی عدالت نے اس کیس میں بہت سے قانونی پہلوؤں کو نظر انداز کیا لہٰذا حنیف عباسی ضمانت کے حق دار ہیں اور ان کی ضمانت منظور کی جاتی ہے۔

لاہور ہائیکورٹ نے حنیف عباسی کی رہائی کا حکم دیا ہے اور انہیں ضمانتی مچلکے جمع کرانے کی بھی ہدایت کی گئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*