تازہ ترین
outline

عثمان شنواری نے کوئٹہ گلیڈیٹرز کے منہ سے بازی چھین لی،کراچی کنگز کی ایک رن سے جیت

پاکستان سپر لیگ سیزن فور کے ناک آئوٹ سیزن کے دلچسپ میچ میں عثمان شنواری نے اپنی شانداد بائولنگ سے بازی پلٹ دی اور آخری لمحوں میں کوئٹہ گلیڈیٹرز کے منہ سے میچ چھین لیا یوں کراچی کنگز کی ٹیم ایک اسکور سے یہ میچ جیت گئی اور پلے آف مرحلے کے لیے کوالیفائی کرنے میں بھی کامیاب ہوگئی

میچ پر کوئٹہ گلیڈیٹرز کی گرفت بہت مضبوط تھی ،١٩ ویں اوور میں وائیڈ بالز نے کام مزید آسان کر دیا اور جب آخری اوور میں صرف پانچ رنز درکار تھے تو یوں لگتا تھا کہ کوئٹہ کو یہ میچ جیتنے سے کوئی طاقت نہیں روک سکتی کیونکہ وکٹ پر احمد شہزاد موجود تھے جنہیں اپنی سنچری مکمل کرنے کے لیئے صرف ایک رن درکار تھا اور سات وکٹیں بھی ہاتھ میں تھیں

مگر پھر عثمان شنواری نے ایسی تباہ کن بائولنگ کی کہ بازی پلٹ گئی -پہلی گیند پر انور علی نے شاٹ کھیلی تو احمد شہزاد نے محض ایک رن لینے پر اکتفا کیا تاکہ وہ اپنی سنچری سکور کر سکیں مگر اگلی ہی بال پر وہ کیچ آئوٹ ہو گئے اور یوں انہیں 99 رنز پر پویلین لوٹنا پڑا-

عثمان شنواری کی تیسری گیند پر انور علی بھی کیچ آئوٹ ہو کر پولین لوٹ گئے تو کپتان سرفراز احمد بیٹنگ کرنے آئے-عثمان شنواری کی چوتھی گیند پر محمد نواز نے سنگل لیا ،اب دو گیندوں پر کوئٹہ کو جیتنے کے لیئے تین رنز درکار تھے مگر پانچویں گیند پر سرفراز کلین بولڈ ہو کر دھوکہ دے گیا

میچ کی آخری گیند پر کوئٹہ گلیڈیٹرز کے بلے باز سہیل تنویر صرف ایک ہی سکور لے سکے اور یوں کراچی کنگز کو اس میچ میں ایک رن سے کامیابی ملی

کراچی کے نیشنل اسٹیڈیم میں کھیلے جارہے پی ایس ایل سیزن فور کے 28 ویں میچ میں کوئٹہ کے کپتان سرفراز احمد نے ٹاس جیت کر پہلے کراچی کنگز کو بیٹنگ کی دعوت دی۔

کولن منرو اور بابر اعظم نے ٹیم کو اچھا آغاز فراہم کرتے ہوئے پہلی وکٹ کے لیے 69 رنز کی اچھی شراکت قائم کی -کنگز کے پہلے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی کولن منرو تھے جو 30 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے، لونگ اسٹون 5 اور کولن انگرام 24 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے، بین ڈنک بھی 18 رنز بنا سکے۔

بابراعظم اعظم نے 56 رنز کی ذمہ دارانہ اننگز کھیلی جب کہ آخری اووز میں افتخار احمد نے بھی 44 رنز کی جارحانہ اننگز کھیلی۔

کراچی کنگز نے مقررہ 20 اوورز میں 5 وکٹوں کے نقصان پر 190 رنز بنائے – محمد حسنین نے دو وکٹیں حاصل کیں جب کہ سہیل تنویر، فواد احمد اور محمد نواز کے حصے میں ایک ایک وکٹ آئی

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے ہدف کا تعاقب کرنا شروع کیا تو اوپنر شین واٹسن اور احمد شہزاد نے اپنی ٹیم کو 68 رنز کا آغاز فراہم کرکے ٹیم کی پوزیشن مستحکم کی –

شین واٹسن 19 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے رلی روسو بھی صرف 10 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے جبکہ عمر اکمل نے بھی 27 رنز کی اننگز کھیلی۔

اس کے بعد احمد شہزاد جم کر کھیلے اور ایک موقع پر میچ یکطرفہ محسوس ہونے لگا مگر پھر عثمان شنواری کی تباہ کن بائولنگ سے صورتحال اچانک بدل گئی

عمر خان نے 4 اوورز میں 26 رنز دیکر 3 جب کہ عثمان شنواری نے 43 رنز دیکر تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا اور عثمان شنواری کو بجا طور پر مین آف دا میچ کا ایوارڈ دیا گیا

ایک طرف کراچی کنگز نے پلے آف کے لیئے کوالیفائی کرلیا ہے تو دوسری طرف لاہور قلندرز کی ٹیم پلے آف کی دوڑ سے باہر ہوگئی ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*