تازہ ترین
outline
Theresa-May-Jeremy-Corbyn

عوامی سروے اور تجزیہ کار ایک بار پھر ناکام ،برطانوی انتخابات میں کوئی جماعت اکثریت حاصل نہ کرسکی

لندن(نیوزڈیسک)برطانوی دارالعوام کے انتخابات میں عوامی سروے اور میڈیا کے تجزیہ نگاروں کی پیش گوئیاں ایک مرتبہ پھر دھری کی دھری رہ گئی ہیں اور کوئی بھی جماعت اکثریت حاصل نہیں کر سکی-
انتخابی نتائج کے مطابق وزیر اعظم تھریسامے کی کنزرویٹو پارٹی نے ٦٥٠نشستوں میں سے 318 پرکامیابی حاصل کی ہے جبکہ سادہ اکثریت کے لیئے انہیں 326 نشستیں درکار تھیں جبکہ ان کی حریف جماعت لیبر پارٹی نے اب تک 261نشستوں پر کامیابی حاصل کی ہے-
نتائج کے برعکس عوامی سروے رپورٹس اور میڈیا نے کنزرویٹو کی کامیابی کا امکان ظاہر کیا تھا-“معلق “پارلیمنٹ تشکیل پانے کے باعث اب کوئی بھی جماعت اکیلے حکومت نہیں بنا سکتی اور اسے کسی چھوٹی جماعت سے اتحاد کرنا پڑے گا-
ان انتخابات میں کنزرویٹو پارٹی کے علاوہ سب سے زیادہ نقصان سکاٹش نیشنل پارٹی کو ہوا وہ صرف 35 نشستیں لینے میں کامیاب ہوئی۔

برطانوی پارلیمان جسے دارالعوام کہا جاتا ہے، کے لیے پولنگ مقامی وقت کے مطابق صبح 7 بجے شروع ہوئی جو کہ رات 10 بجے تک جاری رہی۔

پولنگ کا عمل تقریبا 15 گھنٹے تک جاری رہا جس کے دوران صبح کے وقت پولنگ اسٹیشنز پر لوگوں کا رش کم رہا تاہم شام میں اس میں اضافہ دیکھا گیا، بعض علاقوں میں بارش کی وجہ سے ووٹرز کو پریشانی کا سامنا رہا مگر برطانیہ میں رہائش پذیر پاکستانی کمیونٹی نے ووٹنگ میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*