outline
Featured Video Play Icon

خواتین کے عالمی دن پر کشمالہ طارق کی غنڈہ گردی ،اینکر مطیع اللہ جان پر تشدد ،یرغمال بنا لیا

خواتین کے عالمی دن کی مناسبت سے اینکر مطیع اللہ جان کشمالہ طارق کا انٹرویو کرنے ان کے دفتر پہنچے تو انٹرویو ختم ہونے کے بعد کشمالہ طارق کے اسٹاف نے انہیں یرغمال بنا لیا اور تشدد کے دوران ان کا کوٹ پھاڑ ڈالا

کشمالہ طارق جنہیں وزیر اعظم پاکستان نے چند روز قبل ہی وفاقی محتسب تعینات کیا تھا ،ان کے دفتر میں ہونے والے اس افسوسناک واقعہ کا پس منظر یہ بتایا جاتا ہے کہ اینکر مطیع اللہ جان نے کشمالہ طارق سے حسب معمول چبھتے ہوئے سوالات پوچھے اور جب انٹرویو ختم ہوا تو ان سے کہا گیا کہ وہ نہ صرف کیمرے کی ڈی وی بلکہ موبائل فون میں بنائی گئی فٹیج بھی واپس کریں

جب مطیع اللہ جان نے فٹیج دینے سے انکار کیا تو کشمالہ طارق کے عملے نے نہ صرف ان پر تشدد کیا بلکہ انہیں پروڈکشن ٹیم سمیت یر غمال بنا لیا

ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ چند افراد مطیع اللہ جان کو گھسیٹ کر لے جانا چاہ رہے ہیں اور اس چھینا جھپٹی کے دوران مطیع اللہ جان کا کوٹ پھٹ جاتا ہے

تاہم ابھی تک یہ معلوم نہیں ہو سکا کہ وہ کونسے سوالات تھے جن سے گھبرا کر کشمالہ طارق نے فٹیج طلب کی

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*