تازہ ترین
outline
Featured Video Play Icon

سپریم کورٹ میں خنزیر

اسلام آباد میں اہم ترین مقدمات کی سماعت ہو رہی تھی کہ باہر شور مچ گیا ،سپریم کورٹ وچ سور وڑ گئے (سپریم کورٹ میں خنزیر گھس گئے )چند صحافیوں نے باہر نکل کر دیکھا تو جنگلی جانور پاگلوں کی طرح بھاگ رہے تھے اور چند سکیورٹی اہلکار ڈنڈے لیکر انہیں بھگانے کی کوشش کر رہے تھے

اسی اثنا میں سینئر صحافی اور اینکر مطیع اللہ جان کی آواز سنائی دیتی ہے “ججوں والا راستہ کھول دو“ خدا جانے انہوں نے یہ جملہ کس تناظر میں کہا اور اس کا کیا مقصد تھا

بہر حال سپریم کورٹ میں خنزیز گھس جانے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر آئی تو لوگ بھانت بھانت کے تبصرے کرنے لگا ،کسی نے لکھا میں تو اس منحسوس جانور کا نام بھی نہیں لینا چاہتا -واضح رہے کہ بعض اسلامی روایات کے پیش نظر لوگ اس جانور کا اس قدر نجس اور پلید سمجھتے ہیں کہ اس کا نام بھی نہیں لینا چاہتے کیونکہ ان کے عقیدے کے مطابق ایسا کرنے سے زبان پلید ہو جاتی ہے

وفاقی دارالحکومت میں سپریم کورٹ کی عمارت شاہراہ دستور پر مارگلہ پہلاڑیوں کے نواح میں موجود ہے اور ان پہاڑیوں پر بستے جنگلی جانور بعض اوقات شہر کا رخ کر لیتے ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*