outline

محبت پانے کے لیئے قربانی کی انوکھی مثال ،ملائشین بادشاہ نے تاج و تخت ٹھکرا دیا

محبت ایک ایسا جذبہ ہے جس کے لیئے انسان بڑی سے بڑی قربانی دینے کو بھی تیار ہو جاتا ہے-ہماری لوک داستانوں میں تو ایسی بیشمار مثالیں موجود ہیں مگر ملائشیا کے بادشاہ نے اپنا پیار پانے کے لیئے تاج و تخت ٹھکرا کر قربانی کی انوکھی مثال رقم کی ہے

ملائشیا کے بادشاہ سلطان محمد پنجم کے روسی حسینہ سے پیار اور پھر ماسکو میں شادی کی خبریں سامنے آئی تھیں جس کے بعد وہ دو ماہ کی رخصت پر چلے گئے مگر اب ان کی چھٹی ختم ہونے پر شاہی محل سے اعلان کیا گیا ہے کہ سلطان محمد پنجم نے اپنی ذمہ داریاں سنبھالنے سے معذرت کرتے ہوئے استعفیٰ دیدیا ہے

تاج برطانیہ سے 1957 میں علیحدگی کے بعد ایسا پہلی بار ہوا ہے کہ کسی بادشاہ نے مدت ختم ہونے سے پہلے ہی استعفیٰ دیدیا ہو۔ملائیشیا میں بادشاہت کو آئینی تحفظ حاصل ہے اور پانچ سال کی مدت کے لیئے بادشاہ کو منتخب کیا جاتا ہے اگرچہ یہ رسمی عہدہ ہے مگر اس کی تکریم اور حیثیت بے پناہ ہے

ملائیشیا کے شاہی محل کی جانب سے جاری کیے گئے بیان میں میں استعفیٰ کی تصدیق تو کی گئی ہے مگر وجوہات نہیں بتائی گئیں لیکن غالب گمان یہ ہے کہ سلطان محمد پنجم کو روسی حسینہ سے شادی کی وجہ سے یہ عہدہ چھوڑنا پڑا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*