تازہ ترین
outline

کیا واقعی نوازشریف کی مرُغن غذائوں سے تواضع کی گئی ؟

سابق وزیر اعظم میاں نوازشریف جنہیں علالت کے باعث کوٹ لکھپت جیل سے لاہور کے سروسز ہاسپٹل لایا گیا تھا ان کی خوش خوراکی کے بارے میں میڈیا پر افواہیں گردش کرتی رہیں اور بعض لوگوں نے اس بات پر بھد بھی اڑائی کی دل کا مریض مرغن غذائیں کیسے کھا سکتا ہے ؟

ان افواہوں نے سروسز ہاسپٹل کے ایک ملازم کی تصویر سے جنم لیا جو مرغن غذائوں پر مشتمل ڈش اسپتال کے انتہائی نگہداشت وارڈ کی طرف لے جا رہا تھا ممکن ہے یہ کھانا ڈاکٹروں نے منگوایا ہو یا پھر سکیورٹی پر تعینات افسروں کی خدمت میں پیش کیا جانا ہو لیکن سب نے یہی سمجھا کہ سابق وزیراعظم نوازشریف کی تواضع کی جا رہی ہے

کیا واقعی یہ مرغن غذائیں نوازشریف کے لیئے منگوائی گئیں؟جب “آئوٹ لائن “ نے یہ جاننے کی کوشش کی تو جواب ملا ،ہرگز نہیں- نہ صرف اسپتال کے عملے نے اس بات کی تردید کی بلکہ ڈاکٹروں نے بھی ایسی افواہوں کو غلط قرار دیدیا

نوازشریف کے بھانجے محسن لطیف جو پیر کی صبح ان کے لیئے ناشتہ لیکر پہنچے تھے ،ان سےبھی یہ سوال پوچھا گیا تو انہوں نے بتایا کہ کہ بیماری کےباعث نواز شریف ٹھیک طریقے سے خوراک نہیں لے پا رہے،انہوں نے ناشتے میں صرف پپیتا کھایا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*