outline

اینکر عادل شاہ زیب نے حکومتی مشیر فرخ سلیم کی ملازمت ہڑپ کرلی مگر کیسے ؟

تحریک انصاف کی حکومت یو ٹرن لینے کے حوالے سے مشہور تو بہت ہے لیکن یہ توقع نہیں تھی کہ حکومتی مشیر کے ٹی وی انٹرویو کے بعد اس بات پر ہی یوٹرن لے کیا جائے گا کہ ان صاحب کو کبھی حکومتی مشیر یا ترجمان مقرر کیا گیا

واضح رہے کہ فرخ سلیم جنہیں وزیراعظم کا معاشی مشیر مقرر کیا گیا تھا اور وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے بذات خود ہی یہ اطلاع دی تھی کہ فرخ سلیم اکانومی اور انرجی سے متعلق معاملات پر حکومت کے مشیر ہونگے اور اس حوالے سے نوٹیفکیشن بھی جاری کیا جا رہا ہے

مگر اب وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات نے سوشل میڈیا کے ذریعے وضاحت کی ہے کہ فرخ سلیم حکومت کے ترجمان نہیں ہیں -ہم ڈاکٹر صاحب کو اکانومی سے متعلق معاملات پر ترجمان بنانا چاہ رہے تھے لیکن بعدازاں معلوم ہوا کہ وزیراعظم سیکریٹریٹ نے ملازمتوں پر پابندی عائد کر دی ہے اس لیئے یہ تعیناتی نہ ہو سکی مگر وہ کوئی بھی رائے رکھنے کے حوالے سے آزاد ہیں

اس معاملے کا پس منظر یہ ہے کہ منگل کی شام نجی چینل “ہم نیوز“ کے اینکر عادل شاہ زیب کے پروگرام میں انٹرویو دیتے ہوئے ڈاکٹر فرخ سلیم نے کہا کہ حکومت بیماری کا علاج نہیں کر رہی بلکہ بیماری کی علامات دبانے کی کوشش کر رہی ہے۔ روپے کی قدر میں کمی کے فیصلے کے نتائج اچھے نہیں آ رہے، تیس فیصد ڈیویلیو کیا پیسے کو لیکن ایکسپورٹس پھر بھی کم ہو رہی ہیں۔ متبادل سٹریٹیجی پر سوچنا پڑے گا۔

یہ انٹرویو انہوں نے بطور حکومتی ترجمان دیا مگر اس کے بعد تحریک انصاف کی حکومت اس بات سے ہی مُکر گئی کہ ڈاکٹر فرخ سلیم کو ترجمان مقرر کیا گیا تھا

یہی وجہ ہے کہ سوشل میڈیا پر نہ صرف فواد چوہدری کی نئی اور پرانی ٹویٹس شیئر کی جا رہی ہیں بلکہ یہ بھی کہا جا رہا ہے کہ اینکر عادل شاہ زیب نے فرخ سلیم کی نوکری ہڑپ لی

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*