تازہ ترین
outline

آصف زرداری کا انٹرویو کس نے رکوایا ؟

سابق صدر آصف علی زرداری کا انٹرویو نشر ہونے سے روک دیا گیا ہے جس کے بعد سوشل میڈیا پر شدید ردعمل دیکھنے کو آرہا ہے مگر یہ معلوم نہیں ہو پا رہا کہ انٹرویو روکنے کے احکامات کس نے دیئے

آصف زرداری جو پروڈکشن آرڈر پر قومی اسمبلی میں تھے اور وہاں معروف صحافی حامد میر نے ان کا انٹرویو کیا جب جیو نیوز پر یہ انٹرویو نشر ہونے لگا تو کچھ دیر بعد ہی اچانک کٹ کر دیا گیا اور اس کے بعد انٹرویو نہیں دکھایا گیا

حامد میر نے ٹوئٹر پر اپنے ناظرین سے معذرت کرتے ہوئے کہا ہے کہ جس نے پروگرام رکوایا ہے ان میں ہمت نہیں کہ وہ سر عام اس بات کا اعتراف کر سکیں

ایک اور ٹویٹ میں انہوں نے کہا کہ یہ سمجھنا مشکل نہیں کہ کس نے پروگرام رکوایا ہے۔ ’ہم آزاد ملک میں نہیں رہ رہے۔‘

کچھ دیر بعد انہوں نے ایک اور ٹویٹ کی جس میں بتایا کہ وہ ڈان نیوز کے پروگرام میں کیمرے کے سامنے بیٹھے تھے جب کسی نے ٹیلیفون کرکے منع کر دیا اور ان سے معذرت کرلی گئی

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے اسی معاملے پر ٹویٹ کیا اور کہا کہ ’سلیکٹڈ حکومت صرف سلیکٹڈ آوازیں سننا چاہتی ہے۔‘

پیمرا کی طرف سے انٹرویو رکوانے کی تردید کی گئی ہے اور کہا گیا ہے کہ ان کے ادارے کی جانب سے اس قسم کے احکامات جاری نہیں کیئے گئے -چنانچہ یہ معمہ ابھی تک حل نہیں ہوسکا کہ انٹرویو کس نے رکوایا اور اس انٹرویو میں ایسا کیا تھا ؟

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*