تازہ ترین
outline

زرتاج گل وزیر کی بہن سفارشی خط پر ڈائریکٹر نیکٹا تعینات

وفاقی وزیر برائے ماحولیات زرتاج گل وزیر کی بہن کو سفارشی خط کے بعد نیشنل کائونٹر ٹیرراِزم اتھارٹی میں ڈائریکٹر تعینات کر دیا گیا ہے اور اس ضمن میں زرتاج گل وزیر کا ایک سفارشی خط بھی منظر عام پر آگیا ہے

زرتاج گل وزیر کی ہمشیرہ شبانہ گل گورنمنٹ کالج برائے خواتین میں اسٹنٹ پروفیسر کے طور پر تعینات تھیں جہاں سے انہیں ڈائریکٹر نیکٹا تعینات کر دیا گیا

جب سوشل میڈیا پر تنقید ہوئی تو نیکٹا کے ترجمان نے بتایا کہ ڈیپوٹیشن پر گریڈ17 سے گریڈ 19 تک تعیناتی کیلئے وفاقی و صوبائی محکموں سے 12 درخواستیں ملیں، تین رکنی کمیٹی نے انٹرویو کیے، اسسٹنٹ ڈائریکٹر، ڈپٹی ڈائریکٹر اور ڈائریکٹر کیلئے موزوں امیدوار شارٹ لسٹ کیے۔

ترجمان کے مطابق کمیٹی نے 12 میں سے 6 امیدواروں کی تعیناتی کی سفارش کی اور ان کے کیسز اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کو بھیجے۔

ترجمان نیکٹا نے بتایا کہ شبنم گل منتخب کیے گئے امیدواروں میں سے ایک ہیں، کمیٹی نے میرٹ پران کی تعیناتی کی سفارش کی

مگر اب ایک خط بھی سامنے آگیا ہے جو وفاقی وزیر زرتاج گل وزیر نے اپنی بہن کو ڈائریکٹر نیکٹا لگانے کے لیئے لکھا ۔

یہ اطلاعات بھی ہیں کہ شبانہ گل کو مقالہ چوری کرنے پر پنجاب یونیورسٹی نے نہ صرف ایم فل کی طالبہ کے طور پر نکال دیا تھا بلکہ مستقبل میں بطور معلمہ بھی نااہل قرار دیدیا تھا

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*