outline

فوج بہت طاقتور ادارہ ہےمگر ملک نہیں چلا سکتی ،پاکستان کو سول اداروں نے چلانا ہے،وفاقی وزیر

سائنس و ٹیکنالوجی کے وفاقی وزیر فواد چوہدری نے واضح کیا ہے کی فوج بہت مضبوط اور منظم ادارہ ہے مگر فوج پاکستان کو نہیں چلا سکتی ،ملک کو سول اداروں نے چلانا ہے ،فوج کو چاہئے کہ وہ سول اداروں کو مضبوط کرنے کے لیئے اپنا کردار ادا کرے

نجی ٹی وی چینل “سما نیوز“کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے وفاقی وزیر فواد چوہدری نے کہا کہ ان کی حکومت میں منتخب اور غیر منتخب لوگوں کے درمیان سرد جنگ چل رہی ہے اس جنگ میں کسی کی جیت ہوگی اس کا فیصلہ بہت جلد ہوگا -انہوں نے کہا کہ پارٹی ان کے حوالے نہیں کی جا سکتی جو کبھی کونسلر بھی منتخب نہیں ہوسکتے

وفاقی وزیرفواد چوہدری نے ایک طرف یہ شکوہ کیا ہے کہ اہم فیصلے ہو جاتے ہیں لیکن پتہ ہی نہیں چلتا تو دوسری طرف اس بات کا اعتراف بھی کیا ہے کہ ان کی سابقہ وزارت میں غیر منتخب افراد نے مداخلت کی، ایک وقت میں 5 لوگ کام کریں تو وہی ہو گاجو ہوتا ہے

انہوں نے کہا کہ میں نے بطور وزیر اطلاعات پی آئی ڈی کے ایکسٹرنل پبلسٹی ونگ کو متحرک کیا اور وزارت اطلاعات پہلی بار نظر آئی -انٹر نیشنل میڈیا منیجمنٹ کا معاملہ جو آئی ایس پی آر پہ چھوڑ دیا گیا تھا اسے واپس لیا گیا

فواد چوہدری نے کہا کہ اگر آپ ان معاملات پر فوج کو آگے رکھیں گے تو ملکی تشخص کے مسائل درپیش ہوتے ہیں -فوج پاکستان میں بہت طاقتور ہے ،کوئی شبہ ہی نہیں ہے اس میں فوج سب سے منظم ادارہ ہے لیکن سوال یہ ہے کہ کیا فوج پاکستان کو چلا سکتی ہے؟اس کا جواب ہے نہیں ،ملک کو سویلین اداروں نے چلانا ہے

انہوں نے سوال اٹھایا کہ فوج کو کیا کرنا چاہئے اور پھر خودہی کہا کہ فوج کو چاہئے کہ وہ سویلین اداروں کو مضبوط کرنے کے لیئے اپنا کردار ادا کرے اگر فوج یہ کردار ادا نہیں کرتی تو پھر سویلین ادارے مضبوط نہیں ہو سکتے

وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی نے کہا کہ اگر آئی ایس پی آر یہ طے کر لے کہ پاکستان کا بیانیہ انہوں نے دینا ہے تو وہ یہ کر سکتے ہیں لیکن سوال یہ ہے کہ کیا انہیں کرنا چاہئے ؟اس کا جواب ہے نہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں

آپکا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا

*